حیرت انگیز روس

روس اس وقت  ایک حیران کن اور دل چسپ ملک ہے ۔ یہ ملک دنیا کے 11 فیصد رقبے پر محیط ہے  روس کی سرحد  گیارہ ملکوں سے جا ملتی ہے یہ جنوب میں جاپان ، چین ، شمالی کوریا اور منگولیا سے ملتا ہے  درمیان میں  سنٹرل ایشیا کے ملکوں  قزاقستان ، تا جکستان، ازبکستان، ترکمانستان،آذربائیجان ،، جارحیا اور آرمینیا سے ملتا ہے  یورپ کی  سائیڈ سے یوکرائن ، رومانیہ،بلغاریہ ، بیلاروس، ؛لتھونیا، لٹویا، اسٹونیا  سے اور قطب شمالی کی طرف سے  فن لینڈ اور ناروے سے جا ملتا ہے. اور یہ دنیا کے آخری سرے سے الاسکا کے ذریعے سے امریکا سے بھی جڑا ہوا ہے۔

روس کی تین سرحدیں انتہائی دل چسپ ہیں سینٹ برگ سے فن لیند سے ملتا ہے پیٹر برگ سے ٹرین کے ذریعے سے فن ینڈ جانا ایک رومانوی تجربہ ہے۔ ناروے کے علاقے سورورینجر اور اس کے شہر پیچنگ سکی کے درمیان دس منٹ کا فاصلہ ہے  لوگ یہ فاصلہ پیدل  عبور نہیں کر سکتے اس  لیے وہ روسی علاقے سے سائیکلیں  لیتے ہے۔ سائیکل پر ناروے داخل ہوتے ہیں اور سائیکل کو ناروے کی سرحد پر ہی پھینک کر آگ روانہ ہوتے ہیں ۔ سورورینجر شہر دنیا میں بیکار سائیکلوں کا قبرستان بن چکا ہے شہر میں سائیکلوں کت ڈھیر کی وجہ معیار ہے روسی سائیکلیں  یورپین معیار کے مطابق نہیں ہوتی اس لیے آگے لےجانے کی اجازت نہیں ملتی لہذا انکوں اپنی سرحد پر ہی پھینک جاتے ہیں۔ امریکی ریاست الاسکا اور روس کے درمیان بھی پانی کا ایک چھوٹا سا چینل ہے  چینل کے دونوں سائیڈ پر فیری بھی چلتی ہے۔اور چھوٹے جہاز بھی چلتے  ہے یہ بیس منٹ کا فاصلہ ہے لیکن دونوں کے درمیان چوبیس گھنٹےکا فرق ہے آپ جیسے ہی روس سے امریکا میں داخل ہوتے ہیں آپ چوبیس گھنٹے آگے چلے جاتے ہیں۔  دنیا میں سب سے بڑا  جنگلات کا ذخیرہ بھی روس میں شامل ہے۔ دنیا کے 25 فیصد درخت روس میں ہے چناچہ یہ پوری دنیا کو آکسیجن فراہپ کرتے ہیں ۔

دنیا کی 34 فیصد میٹھا پانی بھی روس میں ہے ۔ چھیل بیکال  دنیا میں میٹھے پانی کا سب سے بڑا ذخیرہ ہے ۔دنیا کا سب سے بڑا دریا والگا بھی روس میں  بہتا ہے دنیا میں سب سے ذیادہ دریا بھی روس میں ہی ہیں اس میں 36 دریا بہتے ہے۔ دنیا کا سب سے سرد ترین مقام اومیکان بھی روس میں ہے اومیکان کا درجہ حرارت منفی 55  ڈگری تک گر جاتا ہے۔

1983 میں اس کا درجہ حرارت منفی 89.2 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا تھا ۔دوسرا سرد ترین مقام ویر خویانسک بھی روس میں ہی ہے

ویر خویانسک کا درجہ حرارت  منفی 45 ڈگری تک گر جاتا ہے

ان دیہات تک صرف سردیوں میں پہنچا جا سکتا ہے۔ کیوں کی سردیوں  میں دریاں جم جاتے ہیں اور ان جمے ہوئے دریاں پر بسیں اور گاڑیاں دوڑنے لگتی ہے ۔ دنیا کا گہرا ترین میٹرو سٹیشن بھی روس کے شہر سینٹ پیٹرز برگ میں ہے اس کی گہرائی 86 میٹر ہے ماسکو  کی زیریں زمین ٹرین بھی زمین سے 82 میٹر گہرئی تک جاتی ہے ۔ یہ اوسط 40  میٹر گہری ہے اور اسکے سٹیشن دیکھنے کے قابل ہیں ۔

 روسی لوگ بہت سمارٹ اور خوبصورت ہوتے ہیں قد لمبے اور جسم ستواں موٹاپا نہ ہونے کے برابر اور یہ لوگ مسکراتے نہیں ہیں

آپ کو شاید یہ جان کر حیرانگی ہوگی کے روس میں  بچوں کو سکول میں نہ مسکرانے کی ٹریننگ دی جاتی ےہے ۔ لہذا آپ کو اگر روس میں کوئی شخص مسکراتاہوا نظر آے تو آپ جان لیں کہ یہ روسی نہیں ہے کوئی غیر ملکی ہے ۔

یہ لوگ  نہ انگریزی جانتے ہے اور نہ بولتے ہیں مسکو شہر  میں آبادی کے لحاظ سے سب دنیا کے سب سے ذیادہ ارب پتی لوگ رہتے ہیں لیکن آپ کو اس کے باوجود ملک کے کسی حصے میں دولت کا وحشیانہ رقص نظر نہیں آتا ہی بلا کے توہم پرست بھی ہیں ۔

یہ نئے گھر میں پہلے بلی کو بھجواتے ہیں اور پھر خود داخل ہوتے ہیں۔ بلی اگر گھر میں داخل نہ ہو تو یہ گھر کو گرا دیتے ہا بیچ دیتے ہیں۔یہ لوگ دولت مند ہونے کے لیے کتے کا پاؤں رگڑتے ہیں اور پیٹر کے مجسمے کے نیچے سکے پھینکتے ہیں۔ روس میں دلہا اور دلہن چرچ میں شادی کرتے ہیں اور شادی کے بعد شہر کا چکر لگاتے ہیں۔ یہ لوگ آہستہ بولتے  اور بہت مہمان نواز ہیں ٹیبل مینرز کے ایکسپرٹ ہیں۔واڈکا شراب  اور سٹرانگ کافی پیتے ہیں چناچہ آپ کو ہر دس پندرہ قدم بعد شراب کی دکان اور سٹار بکس کافی مل جاتی  تاہم  یہ لوگ  پبلک مقامات پر شراب نوشی نہیں کرتے اور نہ ہی غل غباڑہ کرتے۔ روسیوں کی پینے  پلانی کی ؑادت صرف گھروں  اور شراب خانوں ک ہی محدود ہوتی ہے یہ  بوتل اٹھا کر سڑکوں پر نہیں آتے  آپکو مرد اور عورت کے آپس میں لپٹنے اور بوس و کنار کے مناظر نہیں ملتے ۔ عورتیں اس قدر سلم اینڈ سمارٹ ہیں کہ یہ 6 انچ کی ہیل پہن کر آدھا شہر گھوم آتی ہیں ۔ عورتیں زیادہ اور مرد کم ہیں چناچہ آپ کو  ہر طرف عورتیں ہی نظر آتی ہیں۔ ماسکو شہر میں صرف 80 دن  جب کہ سینٹ پیٹرز برگ میں 56 دب سورج نکلتا ہے پورے ملک میں سال کے باقی دن دھند، بادل اور بارش ہی نظر آتی۔ حکومت دو بچے پیدا کرنے  والے خاندان کو دس ہزار ڈالر  رقم انعام کرتی ہے اور  تین بچے پیدا کرنے والے خاندان کو بگ فیملی سمجھا جاتا ہے اور حکمت بگ فیملی کو وی آئی پی خاندان ڈکلیئر کر دیتی ہے  اور ان کو ٹرانسپورٹ ، پارکنگ فیس کی معافی ، تھیٹر کے مفت پاس ، اور سال میں 10 سے 15  دنوں کے لیے چھٹیو ں کی سہولت فراہم کرتی ہے۔ والدین کسی بھی روسی ریاست میں کسی بھی تفریحی مقام پار مفت چھٹیاں گزار سکتی ہیں اور روس میں سائبیرن ٹرین کے نام سے ایک حیران کن ٹرین بھی جاتی ہے یہ دنیا کا لمبا ترین ریلوے سفر ہے ۔ یہ ٹرین 87 شہروں اور والگا دریا سمیت 16  دریاوں کے اوپر سے گزرتی ہے  یہ بھی ایک حیران کن سفر ہے آپ ٹرین میں  بیٹھ کر سائبیریا کے برف ستانوں سے گزر سکتے ہیں۔

Lahore Times

Read Previous

Finale Episode of Mery Paas Tum Ho – Will Blast the Screen in All Major Cinemas

Read Next

Birthday Bash – Abhishek is Celebrating His Birthday with Family

Leave a Reply

Your email address will not be published.